وی کے سنگھ عراق میں یرغمال بنائے گئے39ہندوستانیوں کو وطن واپس لانے کے مشن کو عملی جامہ نہ پہنا سکے

نئی دہلی: اگرچہ امور خارجہ کے وزیر مملکت جنرل وی کے سنگھ عراق میں لاپتہ39ہندوستانیوں کووطن واپس لانے کے مشن مین کامیاب نہیں ہو سکے اور بے نیل و مرام وطن واپس آنے پر مجبور ہو گئے لیکن عراق فورسز نے انہیں یقین دہانی کرائی ہے کہ جتنی جلد ممکن ہوسکے گا ہندوستانیوں کو تلاش کر کے اطن واپس بھیج دی جائے گا ۔ واضح رہے کہ وزیر خارجہ مملکت موصل شہر کو داعش کے دہشت گردوں کے چنگل سے آزاد کئے جانے کے اعلان کے فوراًبعد39ہندوستانی یرغمالوں کو وطن واپس لانے کے لیے عراق پہنچ گئے تھے۔
مسٹروی کے سنگھ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ فضائی حملوں کی وجہ سے تباہ موصل میں اب بھی کہیں کہیں لڑائی جاری ہے اور مکمل طور پر دہشت گردوں کا خاتمہ کرکے حالات کو معمول پر لانے میں ایک سے دو مہینے کا وقت لگنے کا امکان ہے۔ اور اس کے بعد ہی لاپتہ ہندوستانیوں کا سراغ لگ سکتا ہے۔جنرل وی کے سنگھ نے کہا کہ بغداد میں عراقی قومی سلامتی کے مشیر سے ان کی بات ہوئی ہے جنہوں نے بتایا ہے کہ خفیہ اطلاعات کے مطابق 2014 میں ان ہندوستانیوں کو موصل کی ہوائی پٹی کے پاس سے اغوا کیا گیا تھا اور پھر انہیں ایک اسپتال کی عمارت کی تعمیر کے کام میں لگایا گیا تھا۔ بعد میں ان سے کاشت بھی کرائی گئی لیکن جنگ بڑھنے کے بعد انہیں موصل کے پاس بدوش کی جیل میں قید کر دیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی حالات ایسے نہیں ہیں کہ بدوش جیل کی تلاشی لی جائے۔
حالات معمول پر آنے کے بعد ہی جیل کا معائنہ کرنا ممکن ہو گا اور تبھی حقیقی صورتحال کا پتہ چل سکےگا۔ انہوں نے کہا کہ عراقی حکومت اور وہاں کی ایجنسیاں ترجیحی بنیاد پر مغویہ ہندوستانیوں کو تلاش کر رہی ہیں۔ جیسے ہی ان کے بارے میں کوئی تازہ اطلاع ملے گی اور جیل کے معائنہ کے حالات بنیں گے تو وہ دوبارہ وہاں جائیں گے۔ قابل ذکر ہے کہ عراق میں داعش کے دہشت گردوں نے جولائی 2014 میں ایک فیکٹری میں کام کرنے والے 39 ہندوستانیوں کو اغوا کر لیا تھا ان میں زیادہ تر پنجاب کے رہنے والے ہیں۔

Title: without much hype general vk singhs ultimate rescue mission in iraq | In Category: ہندوستان  ( india )
Tags: , ,