دارجلنگ سے مرکزی نیم فوجی دستے ہٹانے کے مودی حکومت کے فیصلے پر کولکاتا ہائی کورٹ کا حکم امتناعی

کلکتہ:(یو این آئی )کلکتہ ہائی کورٹ نے مرکزی حکومت کے دارجلنگ سے مرکزی نیم فوجی دستوں کو واپس بلانے کے فیصلے پر روک لگاتے ہوئے ہدایت دی ہے کہ27اکتوبر تک مرکزی نیم فوجی دستوںکو نہ ہٹایا جائے دارجلنگ سے مرکزی نیم فوجی دستوںکے ہٹانے کے مودی حکومت کے فیصلے کے خلا ف کلکتہ ہائی کورٹ میں اپیل دائر کرتے ہوئے ممتا حکومت نے آج عدالت سے کہا کہ دارجلنگ میں مرکزی نیم فورسز کی سخت ضرورت ہے اس کے باوجود ریاستی حکومت کے مشورے کیے بغیر مرکزی نیم فوجی دستوں کو دارجلنگ سے ہٹایا جارہا ہے۔
اس سے قبل وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کل مرکزی حکومت کے فیصلے پر سخت اعتراض کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کو خط بھی لکھ کر اپیل کی تھی کہ مرکزی فورسز کو نہ ہٹایا جائے۔اتوار کو مرکزی وزارت داخلہ نے ریاستی محکمہ داخلہ کو خط لکھ اطلاع دی تھی کہ 16اکتوبر سے 10کمپنیوں کو دارجلنگ سے ہٹالیا جائے گا۔
تاہم وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی اور وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے درمیان فون پر بات چیت کے بعد مرکز نے 10 کے بجائے 7سات کمپنیوں واپس بلانے کا فیصلہ کیا۔ممتا بنرجی نے مرکز کے فیصلے کو وفاقی ڈھانچہ کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ16جولائی کو کلکتہ ہائی کورٹ کے فیصلے کی بھی توہین ہے کیوں کہ کلکتہ ہائی کورٹ نے مرکز کو ہدایت دی تھی کہ ریاست کی مدد کریں۔

Title: calcutta high court stays withdrawal of central forces from darjeeling after west bengal plea | In Category: ہندوستان  ( india )