فلسطین پر ہندوستان کا اپنا موقف اور اپنی پالیسی ہے: ترجمان

نئی دہلی: امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے ذریعہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالخلافہ تسلیم کیے جانے کے چند گھنٹے بعد ہندوستان نے بہت محتاط انداز اختیار کرتے ہوئے کہا کہ وہ فلسطین کے حوالے سے ایک آزاد پالیسی پر، جوکسی تیسرے ملک کے زیر اثر نہ ہوا، عمل پیرا ہے۔مسٹر ٹرمپ کے اس اعلان کا اسرائیلیوں نے تو خیر مقدم کیا لیکن عرب اور دیگر مسلم ممالک میں اس کی زبردست مذمت کی جارہی ہے اور ہندستان میںبھی خارجہ امور کے ماہرین نے انتباہ دیا ہے کہ یروشلم کو تسلیم کر نے کے ٹرمپ فیصلہ سے عالم عرب کے سامنے نئے چیلنج منھ پھاڑے کھڑے ہو جائیںگے۔ہندوستان کے ایک سرکاری ترجمان نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ فلسطین پر ہندوستان کاموقف آزادانہ اور یکساں ہے۔ہمارا موقف ہمارے نظریات و مفادات کے وابستہ ہے کسی تیسرے ملک کے زیر اثر نہیںہے۔ہندوستان روایتی طور پر دو ملکی تصفیہ کے جزو کے طور پر ایک آزاد فلسطین کی حمایت کرتا ہے۔لیکن بیان میں یروشلم کو امریکہ کی جانب سے اسرائیلکا دارالخلافہ تسلیم کرنے کے حوالے سے براہ راست کچھ نہیںکہاگیا۔

Title: indias position on palestine independent says mea | In Category: ہندوستان  ( india )