وزیر اعلیٰ بہار نتیش کمارکے قافلہ پر پتھراؤ،2سیکورٹی اہلکار زخمی

پٹنہ: بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کے قافلہ پر آج اس وقت بکسر ضلع کے ایک گاؤں میں پتھراؤ ہوا جب وہ ریاست گیر وکاس سمیکشا یاترا کے جزو کے طور پر اس گاؤں سے گذر رہا تھا۔
لیکن وزیر اعلیٰ کا اس پتھراؤ سے کوئی چوٹ نہیں پہنچی۔سرکاری ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ کو تو بحفاظت نکال لیا گیا لیکن ان کی سیکورٹی کے دو اہلکار زخمی ہوگئے۔واضح رہے کہ نتیش کمار کئی برسوںسے ا پنیحکو مت کی جاری کردہ فلاحی و ترقیات اسکیموں پر مختلف اضلاع میں عمل آوری کاجائزہ لینے کے لیے 12دسمبر سے اس یاترا پر ہیں۔
اس حملے سے بے نیاز نتیش کمار نے کہا کہ کچھ لوگوںکو ریاست میںترقی کے ان کے عزم پر تکلیف ہے ۔وہ عوام کو گمراہ اور مشتعل کرنے میں لگے ہیں لیکن لوگوں کو اس قسم کی معمولی وارداتوںپر فکر مند ہونے کی ضرورت نہیں۔
وزیر اعلی نے کہا کہ وہ صرف پٹنہ میں بیٹھ کر حکومت نہیں چلانا چاہتے بلکہ میرا مقصد گاؤ ںگاؤں گھوم کر ترقیاتی اسکیموں کی پیش رفت اور زمینی حقیقت کا جائزہ لینا ہے تاکہ سڑکیں ، صاف پینے کا پانی اور بجلی جیسی بنیادی سہولتیں ہر گاؤں تک پہنچ سکیں۔

Title: nitish kumars convoy attacked pelted with stones during samiksha yatra in bihars buxar | In Category: ہندوستان  ( india )